Pages

3/11/2005

کزن

ہر گام پر ہر سمت پر نمودار کزن ہے

حالانکہ جن بھوت نہ اوتار کزن ہے

اس دور میں ہر موڑ پر درکار کزن ہے

کہتے ہیں سب رشتوں کا سردار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

مانا کہ وہ جن بھوت نہیں بلکہ بشر ہے

پر یہ کیسے معلوم وہ مادہ ہے کہ نر ہے

حوا کی دختر ہے کہ گلنار کا سر ہے

گلفام کی وہ بیوی ہے کہ گلنار کا سر ہے

وہ جنس کہ ہے جنس پر اسرار کزن پے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

اس جنس کے پردے میں سجن ہے کہ سجنا

پگڑی کہیں چمکے ہے نہ کھنکے ہے کنگنا

بس لفظ کزن بول کہ خود گول ہے دنیا

لیکن کسے معلوم وہ کزن ہے کہ کزنیا

اس راز کے اظہار کا انکار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

ماموں ، چچا، خالہ کا وہ بیٹی ہو کہ بیٹا

سب دور نزدیک کے رشتوں کو لپیٹے

سوتیلے سگے دور کے منہ بول گھسیٹے

رشتوں کے سمندر کو یہ کوزے میں سمیٹے

زنبیل جناب عمرو عیار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

اس رشتے کے پھلاؤکے پلٹن کا یہ عالم

سالے کا کزن سالے کے سالے کا باہم

ڈھونڈو جو ایک تو سو خود ہوں فراہم

لگتا ہے کہ کزن عرش سے گرتے ہیں دھمادھم

اس رشتے کا ہر تال لگاتار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

رشتہ کسی اپنے کا اگر یاد نہ آئے

یا رشتے کی تفصیل چھپانا کوئی چاہے

بغلیں نہیں جانکے نہ پسینہ وہ بہائے

اک لفظ کے ہتھیار کو کام میں لائے

ہر موقع پر وہ مارے کہ ہتھیار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

لڑکی جو کوئی بوائے فرینڈ اپنالے

جل جل کر کریں طعنہ زنی دیکھنے والے

وہ شوخ پھر اک نسخہ اکسیر نکالے

یہ کہہ کر وہ طنز کے طوفان کو ٹالے

وہ دوست نہیں میرا خبردار! کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

اس رشتے میں حائل نہیں بچپن یا بڑھاپا

دو سال کا پپو ہو یا دس بچوں کا پاپا

رنڈوا ہو یا بیاہتا کنوارا ہو سراپا

دوشیزہ کنواری ہو یا بیوہ بڑی آپا

شادی کا نہ کچھ عمر کا غم خوار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

اعلی کسی عہدے پر کزن ہو تو بہر حال

گھر بیٹھےعزیزوں کے بنیں کام بچے مال

جھنجٹ نہ شفارش نہ رشوت کا ہی جنجال

اب ڈر ہو بھلا کاہے کا سیاں بنے کوتوال

دن رات مراعات کی پھر برمار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

کہہ کہہ کے کزن دیئے ہو کیوں لوگوں کو چکر

کیا شرم ہے کہنے میں بہن بھائی بر را در

انگریزی کے اس لفظ میں دھوکا ہے سراسر

احمق ہی بنانے کے سب انداز ہیں اظہر

اپریل کا فول میرے یار کزن ہے

واللہ عجب رشتہ شاہکار کزن ہے

0 تبصرے:

اگر ممکن ہے تو اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

بد تہذیب تبصرے حذف کر دیئے جائیں گے

نیز اپنی شناخت چھپانے والے افراد کے تبصرے مٹا دیئے جائیں گے۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔