3/07/2005

وکیل

میں سچ کہوں گی پھر بھی ہار جاؤ گی وہ جھو ٹ کہے گا پھر بھی لاجواب کر دے گا
پروین شاکر کا یہ شعر شاید اپنے کسی وکیل دوست کے لئے تھا،کہا جاتا ہے کہ وکیل اور جھوٹ کا چولی دامن کا ساتھ ہے،ہمارے یہاں یہ پیشہ انگریزی دور میں آیا۔ وکیل کے بارے میں انگریز کی اپنی رائے ہے
'Lawyer is always lier'ِؕ
جس طرح اگر کوئی بچہ وعدہ کرے کے بھول جائےاورمستقبل کے سہانے سپنے دیکھائے اس کے بارے میں قیاس کیا جاتا ہےوہ سیاست دان بنے گا ایسے ہی کسی کی حمایت میں کوئی بچہ اس طرح جھوٹ بولے کہ سچ کا گمان ہو،اس کے وکیل بننے کی پیشن گوئی کی جاتی ہے۔ کسی وکیل کے دوست نے اس کے انتقال کے بعد اس کی قبر کے واسطے کتبہ بنوانےکے لئے کاتب کو یہ تحریر لکھنے کو کہا "حیرت انکیز؛اس قبر میں ایک شخص،ایمانداروسچا اور وکیل دفن ہے "تو کاتب نےرائے دی کہ یوں لوگ سمجھے گے کہ اس قبر میں تین افراد دفن ہیں لہذا آپ یہ مجھ پر چھوڑ دے کہ کیا لکھنا ہے،اس نے لکھا"اس قبر میں ایک سچا و ایماندار وکیل دفن ہے"اب ہر کتبہ پڑھنے والا کہتا ہے"حیرت ہے"۔ وکیل جب بھی بات کرتا ہے مکمل حوالے کے ساتھ
؃ جھوٹ بولا توعمر بھر بولا تم نے اِس میں بھی ضابطہ رکھا
ایک شاعر نے وکیل کا شجرہ نسب ہی تبدیل کر دیا ہے
؃جس دن پیدا ہوا جہا؂ں میں پہلا وکیل شیطان نے کہا،لو ہم بھی صاحب اولاد ہو گئے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

بد تہذیب تبصرے حذف کر دیئے جائیں گے

نیز اپنی شناخت چھپانے والے افراد کے تبصرے مٹا دیئے جائیں گے۔