4/08/2005

سوری یار

پہلے پہل وہ خود آتا تھا پھر بھیجا اس نے گلدستہ گلدستہ گھٹ کے کارڈ بنا کارڈ بنا پھر فون کال اب کال کی بھی کال پڑی ہے فرصت کی نہ کوئی گھڑی ہے کہہ دیتا ہے سوری یار بھول گیا میں اب کی بار اگلی ساون کی تقریب میں تیرے لئے لے کر آؤں گا میں ہار

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

بد تہذیب تبصرے حذف کر دیئے جائیں گے

نیز اپنی شناخت چھپانے والے افراد کے تبصرے مٹا دیئے جائیں گے۔