12/02/2005

مت تھوکیں

ہائی کورٹ میں ایک جگہ یہ جملہ لکھا ہے "برائے مہربانی یہاں پر مت تھوکیں" دوست کہنے (مذاق) لگا جس کے پاس مت(عقل) نہ ہو وہ کیا تھوکے۔۔۔۔ ویسے کیا ہم میں اتنی بھی سمجھ بوجھ نہیں کہ ہم خود سے جانیں کہ کیا غلط ہے کیا درست۔۔۔ جو ایسی سادہ باتیں بھی اب لکھ کر حکم کی شکل میں لگائی جائیں۔۔۔۔۔ مزید افسوس یہ کہ اس پر بھی عمل نہیں ہوتا۔۔۔کیوں؟؟؟ کوئی جواب ہے آپ کے پاس

3 تبصرے:

  1. کیوں آدھی لڑائی ہوتی ہے!

    ویسے کچھ اجباب کا خیال ہے اس طرح کے پیغامات کا مطلب یہ ہے کہ اگر آپ اونچے درجے کے ہیں تو آپ یہاں تھوک سکتے ہیں۔ورنہ اس کا مطلب آپ کمتر ہیں۔

    جواب دیںحذف کریں
  2. آپ کبھی کراچی کے ملٹی سٹوری فلیٹس میں گئے ہیں ؟
    سواۓ چند استسناء کے سب کی سیڑھیاں ایسی ہوتی ہیں کہ مجھے تو قے ہوتے ہوتے بچی ۔ پان کے تھوک بھی نمایاں ہوتے ہیں ۔گندگی پنجاب میں بھی ہوتی ہے لیکن ایسی میں نے کبھی نہیں دیکھی ۔

    جواب دیںحذف کریں
  3. such a thought provokin......nice blog

    جواب دیںحذف کریں

بد تہذیب تبصرے حذف کر دیئے جائیں گے

نیز اپنی شناخت چھپانے والے افراد کے تبصرے مٹا دیئے جائیں گے۔