ّ بے طقی باتیں بے طقے کام: 03/15/13

اگلے کی باری کے لئے عدت

اوئے کن سوچوں میں گم ہے
“یار ایک ٹینشن میں ہوں مگر جواب نہیں مل رہا؟”
کیسی ٹینشن؟
“یہ نگران حکومت کا عرصہ تین ماہ کیوں ہوتا ہے؟
یار یہ تو آئین میں درج ہے اس لئے
“ابے یہ تو مجھے بھی معلوم مگر یہ مدت ہی کیوں؟؟؟”
وہ اس لئے کہ ہم مسلمان ہیں!
“مطلب؟”
اچھا سمجھاتا ہوں پہلے یہ بتا کہ عوام اسم مذکر ہے یا مونث؟
“قاعدے کے مطابق تو یہ مونث ہی ہے”
اور حکمران کیا ہیں؟
“حکمران چور ہیں”
ابے میں حکمران بطور اسم پوچھ رہا ہوں!
“تو کیا مجھ سے اردو کا پرچہ حل کروانے آیا ہے جو تذکیر و تانیث کھیل رہا ہے؟ چلو وہ مذکر ہے پھر”
تو سمجھ لے ناں تین حیض قریب تین ماہ ہی بنتے ہیں ناں
“لعنت ہے یار تیری منتق پر تیرا مطلب ہے وہ ہماری _____________________ ۔ تجھ سے تو کچھ پوچھنا ہی بے کار ہے”