ّ بے طقی باتیں بے طقے کام: 04/08/05

سوری یار

پہلے پہل وہ خود آتا تھا پھر بھیجا اس نے گلدستہ گلدستہ گھٹ کے کارڈ بنا کارڈ بنا پھر فون کال اب کال کی بھی کال پڑی ہے فرصت کی نہ کوئی گھڑی ہے کہہ دیتا ہے سوری یار بھول گیا میں اب کی بار اگلی ساون کی تقریب میں تیرے لئے لے کر آؤں گا میں ہار